Forum Pakistan
New User? Register | Search | Memberlist | Log in
Forum Pakistan - Pakistani Forums
Pakistani forum to discuss Pakistani Media, Siasat, Politics Talk Shows, Khaber Akhbar, Khel, Cricket, Film, Dramas, Songs, Videos, Shairy, Shayari, Pyar Mohabbat ki Kahani, Tourism, Hotels, Fashion, Property, Naukary Gupshup and more.
Watch TV OnlineLive RadioListen QuranAkhbarFree SMS PakistanResults OnlineUrdu EditorLollywoodLive Cricket Score
Government DepartmentsKSE Live RatesUseful LinksJobsOnline GamesCheck EmailPromote us
GEO News LiveGEO NewsDawn News Live TVExpress News

ForumPakistan.com

Bookmark site!


Os rooz yah khula


Bookmark and Share
 
Reply to topic    Forum Pakistan - Pakistani Forums Home » Urdu Adab
Os rooz yah khula
Author Message
Dr Maqsood Hasni
Senior Proud Pakistani
Senior Proud Pakistani


Joined: 09 Jun 2007
Posts: 1094
Location: punjab

Os rooz yah khula

اس روز یہ کھلا
رواوی: ارشد حکیم
منسانہ


مثل مشہور ہے پانچوں انگلیاں برابر نہیں ہیں۔ اس کی عملی صورت اس روز دیکھنے میں آئی۔ ریاست ہائے گگن کے شہنشاہ کا ایلچی کسی ریاست کے گورنر کے پاس شہنشاہ دلو لال کا ضروری پیغام لے کر جا رہا تھا۔ اس کا گھوڑا ہوا سے باتیں کرتا ہوا منزل مقصود کی طرف دوڑا چلا جاتا تھا کہ ایلچی نے دیکھا ایک شخص سڑک کنارے درختوں کے سایہ میں گہری نیند سویا ہوا تھا۔ اس کا منہ کھلا ہوا تھا اور ایک سانپ اس کی طرف بڑھا چلا جاتا تھا۔ سانپ اس کے کھلے منہ میں گھس گیا۔
یہ پہلا یا شاید آخری شاہی کرندہ تھا جس کے من میں کسی گریب اور عام شخص کے لئے دیا نے سر اٹھایا ورنہ شاہ اور شاہ والے مطلب سے غرض رکھتے ہیں۔ شاہ اور شاہ والوں کو ہمیشہ حصولی سے ہی مطلب رہا ہے۔ کوئی مرے کھپے جان سے جائے انہیں اس سے کوئی غرض نہیں ہوتی۔
وہ جلدیوں میں بھی تھا۔ اس لیے بھی اس کی جان بچانے کی فکر لاحق ہونا حیرت سے خالی نہ تھا۔ وہ تیزی سے اس لیٹے ہوئے شخص کی طرف بڑھا۔ اس نے اس شخص کے ایک چھانٹا رسید کیا اور کہا دوڑ۔ وہ ہڑبڑا کر اٹھ بیٹھا۔ وہ گھبرا گیا کہ یہ آفت اچانک کہاں سے ٹوٹ پڑی۔ منہ اور دل ہی دل میں اسے گالیاں اور بددعائیں دے رہا تھا۔ جب ٹھہرتا یا آہستہ ہوتا تو وہ چھانٹا رسید کرتا۔ اس نے رک کر سوار سے وجہ پوچھنے کی کوشش کی۔ جواب میں سوار نے ایک زور دار چھانٹا رسید کیا۔ وہ پھر سے دوڑنے لگا۔ اس پر حیرتوں کا پہاڑ ٹوٹا پڑتا تھا لیکن کیا کرتا رکتا تو چھانٹا دوڑتا تو سانس پھولتا۔ خیر وہ پھر سے دوڑنے لگا۔
آگے چل کر ایک ندی آئی۔ اس نے پانی پینے کی اجازت طلب کی جو مل گئی۔ اس نے پیٹ اور حاجت بھر پانی پیا۔ جب رکا تو سوار نے کہا اور پی۔ اس نے اور پیا۔ اس نے اسے اتنا پانی پلایا کہ اس شخص کی بس بس ہو گئی۔ سوار نے اسے چھانٹا رسید کرکے دوبارہ سے دوڑنے کا حکم سنایا۔ وہ دوڑنے لگا۔ رکتا تو وہ چھانٹا رسید کرتا۔
آگے چل کر ایک امرودوں کا باغ آ گیا۔ اس نے اسے امرود کھانے کا حکم لگایا۔ وہ امرود کھانے لگا۔ وہاں اور پی یہاں اور کھا اور کھا کا حکم صادر ہوا۔ آخر کب تک اسے قے آنا شروع ہو گئی۔ قے کے ساتھ منہ سے سانپ باہر آ گیا۔ سانپ کو دیکھ کر وہ شخص حیران رہ گیا۔ اصل معاملہ وہ اب سمجھا۔ اب کہ اس کے منہ اور دل سے دعائیں نکلنے لگیں۔ سوار مسکرایا اور اپنی منزل کی طرف بڑھ گیا۔
اس روز یہ بات بھی کھلی بعض اوقات زحمت بھی رحمت کا سبب بنتی ہے۔ ہر زحمت کی گرہ میں کوئی ناکوئی اچھائی بھی پوشیدہ ہوتی ہے۔




_________________
iushah
Wed Aug 01, 2018 5:39 pm View user's profile Send private message
Display posts from previous:    
Reply to topic    Forum Pakistan - Pakistani Forums Home » Urdu Adab All times are GMT + 5 Hours
Page 1 of 1

 
Gupshup Forum: Urdu ForumIslam ForumPakistan Army ForumAap Ka SheharNaukaryPakistani Visa
Desi Sports and News: Live CricketSports ForumAkhbar OnlinePakistan EventsWorld News Discussion
Entertainment Media: PTV ForumGEO ForumLollywood ForumBollywood OnlineHollywood ForumDesi Radio
Desi Masala Forums: Gupshup Chit ChatComputer GamesMusic ForumDrama ForumsGhazal ForumDesi FashionDesi Food
Official Forums (Government Department): Dak Khana ChatPolice ForumWapda OnlinePTCL ForumUfone ForumRailway ForumSehat Chit ChatTaleem OnlineTax Forum PKZameen ForumAdalat Forum


Pure Pakistani forum to express your views, thoughts with complete freedom. Archives 1 2

Copyright © ForumPakistan.com.pk 2017 All rights reserved.

Contact Us | Advertise | Report Abuse | FP Team | Disclaimer